احتساب عدا لت نے آصف علی زرداری کو جیل سے پمز منتقل کرنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا

اسلام آباد :  احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے جعلی بینک اکاونٹس کیس کے ملزم آصف علی زرداری کو بیماری کے باعث اڈیالہ جیل سے پمز منتقل کرنے کی درخواست پر سماعت کی جس کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا، پیر کے روز جعلی بینک اکاونٹس کیس میں آصف زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ نے عدالت سے استدعا کی کہ زرداری صاحب کو دو ذاتی اٹینڈینٹ ساتھ رکھنے کی اجازت دی جائے، ہمارے لوگ جیل کے باہر اپنا خیمہ لگا لیں گے، صرف صبح اور شام اندر جا کر چیک کریں گے ،کیس کی سماعت کے دوران آصف زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ سابق صدر کی جان کو خطرہ ہے، طبی سہولیات ملنا ان کا حق ہے،انہوں نے عدالت کو بتایا کہ زرداری صاحب کو دل کی تکلیف ہوئی تو یہ لوگ اسپتال نہیں پہنچا سکیں گے کیونکہ اڈیالہ جیل سے اسپتال تک ڈیڑھ گھنٹہ لگ جاتا ہے،لطیف کھوسہ نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ میڈیکل بورڈ نے طبی سہولیات کے لیے زرداری کو پمز منتقل کرنے کا کہا جس کے بعد یہ لوگ ایک دن پمز لے کر گئے مگر دوسرے ہی دن جیل واپس منتقل کر دیا،انہوں نے کہا کہ زرداری اس حکومت سے کچھ بھی نہیں لینا چاہتے لیکن انہیں قانونی حق ملنا چاہیے،لطیف کھوسہ نے عدالت سے استدعا کی کہ زرداری صاحب کو دو ذاتی اٹینڈینٹ ساتھ رکھنے کی اجازت تو دیں، ہمارے لوگ جیل کے باہر اپنا خیمہ لگا لیں گے، صرف صبح اور شام اندر جا کر چیک کریں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں