صوبائی مشیر برائے ثانوی تعلیم کا ایف اے ایف ایس سی امتحانی مراکز پر چھاپہ

کوئٹہ:  وزیر اعلیٰ بلوچستان کے مشیر برائے ثانوی تعلیم حاجی محمد خان لہڑی کا کوئٹہ میں جاری ایف اے ایف ایس سی امتحانی مراکز پر چھاپہ کے دوران گورنمنٹ گرلز کالج پوسٹل کالونی میں نقل کرتے ہوئے 6 طالبات جبکہ سنٹرل ہائی سکول میں موبائل فون کے استعمال پر 7 طلباء کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیا گیا بلکہ نگران اسٹاف کی سرزنش اور کنٹرولر کو کارروائی کی ہدایات جا ری کی گئی ، ایلمینٹری کالج ارباب کرم خان روڈ پر چھاپہ کے دوران 3 امیدوار کیخلاف غیر قانونی ذرائع کے استعمال پر کارروائی کا حکم۔ نگران اور عملے کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار۔ نقل کی کسی صورت اجازت نہیں دی جاسکتی صوبائی مشیر کی تمام مراکز کی سخت نگرانی کی ہدایات۔ صوبائی مشیر تعلیم حاجی محمد خان لہڑی نے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں مختلف امتحانی مراکز کا اچانک دورہ کیا جہاں ایف اے ایف ایس سی کے امتحانات جاری ہیں۔ انہوں نے بعض مراکز میں امتحانات میں ناجائز ذرائع کے استعمال پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔ نقل اور موبائل فون کے آزادانہ استعمال پر ممتحن، امتحانی عملے کیخلاف کارروائی کی ہدایات بھی جاری کیں۔ انہوں نے کنٹرولر امتحانات عبدالنبی ساسولی کے ہمراہ مختلف مراکز کا دورہ کیا۔ جن میں گورنمنٹ گرلز کالج پوسٹل کالونی، گورنمنٹ سنٹرل ہائی سکول،ایلیمنٹری کالج ارباب کرم خان روڈ کوئٹہ شامل ہیں۔ اس موقع پر صوبائی مشیر نے کہا کہ شفاف انتخابات کے انعقاد ہماری پہلی ترجیح ہے، کسی کو امتحانی مراکز میں غیرقانونی ذرائع کے استعمال کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ امتحانی عملہ سخت نگرانی اور امتحانی مراکز میں دوستانہ ماحول برقرار کھنے کیلئے کردار ادا کریں۔ فرائض میں غفلت برتنے والے امتحانی عملے کیخلاف سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ نقل جیسے ناسور کے خاتمے تک چھین سے نہیں بیٹھیں گے۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان کے اس سلسلے میں واضح ہدایات ہیں۔ نقل سے پاک امتحانات ہماری اولین ترجیح ہے اس پر کسی قسم کا کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کنٹرولر بورڈ کو ہدایات جاری کیں کہ صوبے کے تمام امتحانی مراکز کی کڑی نگرانی کے لیے تشکیل دی گئی ٹیموں کی مؤثر مانیٹرنگ اور بروقت رپورٹنگ کو یقینی بنائی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں